ہم نے حق سچ اور انسانیت کی بات کی,ایم کیو ایم کو چھوڑنے کی سب سے چھوٹی سزا موت تھی :مصطفیٰ کمال

کراچی(میکس نیوز پاکستان)پاک سرزمین پارٹی کے سربراہ مصطفی کمال نے کہاہے کہ ایم کیو ایم کو چھوڑنے کی سب سے چھوٹی سزا موت تھی ، ہم نے مرنے والا راستہ اختیار کیا ، ہم نے حق سچ اور انسانیت کی بات کی تھی۔

نجی ٹی وی کے مطابق سید مصطفیٰ کمال کا کہنا تھا کہ پی ایس پی وجود سے لیکر آج تک نئی تاریخ رقم کر رہی ہے، اللہ نے جو ہم سے کام لیا وہ کسی مجعزہ سے کم نہیں، آج کے دور میں انسان دولت کے پیچھے بھاگ رہا ہے اور دنیاوی چیزیں حاصل کرنے کے لئے کچھ بھی کر سکتا ہے ،الیکشن 2018 میںپی ایس پی کو بد ترین شکست کا سامنا کرنا پڑا لیکن ہم نے اپنا حوصلہ نہیں ہارا ،دنیا یہ سمجھ بیٹھی تھی کہ 26 جولائی کو پی ایس پی کے دفاتر بند ہو جائیں گے لیکن ہم آج بھی ڈٹ کر اپنے اسی موقف کے ساتھ کھڑے ہیں ۔سید مصطفیٰ کمال کا کہنا تھا کہ مخالفین کہتے تھے کہ حالیہ الیکشن میں بدترین شکست کے بعد مصطفی کمال اور انیس قائم خانی اگلی فلیٹ سے پاکستان سے چلے جائیں گے،میرے رب کا احسان دیکھو، پانچ ماہ گزارنے کے باوجود بھی پی ایس پی اپنی جگہ پر ہے،دنیا کو حسرت ہی رہے گی کہ ہم میدان چھوڑ کر بھاگ جائیں گے ۔انہوں نے کہا کہ میں نے یہ کام پیسے کے لئے نہیں انسانیت کی بھلائی کے لئے شروع کیا، میں اور میرے ساتھی جہاد کر رہے ہیں، تین سال پہلے یہ پوچھتے تھے کہ یہ ساری باتیں کرکے گھر سے کیسے نکلو گے؟آج دیکھ لیں ہم موجود ہیں اور ہماری پارٹی سے کوئی دھڑا بھی نہیں نکلا ۔